LOADING

Type to search

BREAKING NEWS National SCANDALS Uncategorized

راولپنڈی(ڈیجیٹل پوسٹ) میگا سٹی گوجر خان | میگا سٹی نوسر باز ٹولے نے لینڈ مافیا کے ذریعے جدی مالکان کی 400 کنال سے زائد اراضی پر قبضہ کر لیا گیا

Share

غیر قانونی میگا سٹی گوجر خان

سائٹ آفس مقبوضہ اراضی پر بنایا گیا۔
نشاندہی عمل تعطل کا شکار ہو گیا

میگا سٹی نوسر باز ٹولے نے لینڈ مافیا کے ذریعے جدی مالکان کی 400 کنال سے زائد اراضی پر قبضہ کر لیا گیا

میگا سٹی سائٹ آفس سو فیصد ہماری زمین پر بزور طاقت قبضہ کرکہ بنایا گیا ہے،نشاندہی سے حقیقت کھل کر سامنے آ جائے گی۔متاثرین

اسٹنٹ کمشنر گوجر خان آفس کے قریب مین جی ٹی روڈ پر غیر قانونی میگا سٹی گوجر خان کے تشہیری بورڈز آویزاں ہیں

میگا سٹی گوجر خان سائٹ آفس جسے مبینہ طور پر قبضے کی زمین پر تعمیر کیا گیا ہے

راولپنڈی ڈیویلپمنٹ اتھارٹی ویب سائٹ کا عکس جس میں میگا سٹی(اقبال سٹی)کو غیر قانونی قرار دیا گیا ہے

 

راولپنڈی(نمائندہ خصوصی)میگا سٹی گوجر خان کا سائٹ آفس بھی قبضے کی زمین پر تعمیر کیئے جانے کا انکشاف ہوا ہے موہڑہ میال کے رہائشی جنید نے روزنامہ ڈیجیٹل پوسٹ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا جس جگہ پر میگا سٹی گوجر خان کا دفتر بنایا گیا ہے یہ زمین انکے خاندان کی ملکیت ہے ناجائز قبضے سے قبل وہ اس زمین پر خود بھی فصلیں کاشت کرتے رہے ہیں انکے اباء و اجداد دہائیوں سے اس رقبہ اراضی کے مالک ہیں جارو رتیال کے دس سے زائد خاندانوں کی اراضی پر قبضہ کیا جا چکا ہے جن میں دلدار حسین فوجی 27 کنال،حوالدار ریٹائرڈ محمد سعید 150 کنال،ایس ایس جی کمانڈو ریٹائرڈ حاجی محمد،حوالدار عبدالرحمان 22 کنال،حوالدار محمد عنایت 23 کنال، شیر افضل وغیرہ 44 کنال،محمد آزاد شوکت 4 کنال 16 مرلے،کیپٹن مہربان ڈھائی کنال،آفتاب بلوچ 4 کنال 16 مرلے،دیوان علی 8 کنال،خان بہادر 8 کنال،عنایت 15 کنال،صابر وغیرہ 20 کنال،محمد اسلم 33 کنال اور محمد تاج رقبہ5 کنال 6 مرلے شامل ہیں جبکہ مسہ کسوال اور جارو رتیال کے چند افراد نے قبضے کے بعد اونے پونے داموں زمینیں میگا سٹی کو فروخت کر دی ہیں

 

ذرائع کے مطابق نوسرباز میگا سٹی مالکان نے موضع مسہ کسوال میں پہلے سے قائم ایک ہاؤسنگ سوسائٹی اقبال ٹاؤن کے مالکان راجا اقبال سے خریدی اور نام تبدیل کرکہ میگا سٹی گوجر خان کے نام سے پراجیکٹ کا آغاز کر دیا،شیخ طیب العزیز بلڈرز،مبشر حیات ارتھ لنک انٹرپرائزز اور چوہدری قیصر ٹائیکون بلڈرز پر مشتمل لینڈ مافیا نے بحریہ ٹاون راولپنڈی میں دفتر بنا کر راولپنڈی ڈیویلپمنٹ اتھارٹی سے ایل او پی منظور ہوئے بغیر این او سی حاصل کیئے غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹی کی پرنٹ،الیکٹرانک، ڈیجیٹل،آوٹ ڈور ایڈورٹائزنگ، پراپرٹی ڈیلرز،رئیل اسٹیٹ مارکیٹنگ کمپنیوں اور یوٹیوبرز کے ذریعے اندرون ملک اور بیرون ملک اوورسیز پاکستانیوں کو ہزاروں فائلیں فروخت کر دیں نوسرباز گروہ نے ٹریڈنگ کے ذریعے اربوں روپے لوٹے اور منی لانڈرنگ کے ذریعے بیرون ملک منتقل کر دیئے روزنامہ ڈیجیٹل پوسٹ کے میگا سٹی گوجر خان سائٹ وزٹ کے دوران ہوش ربا حقائق سامنے آئے ہیں۔فراڈ منصوبے کے مالکان نے دن دیہاڑے سرکاری اراضی جس میں شاملات مفاد عامہ اور تالاب کیلئے مختص اراضی کو بھی نہ بخشا اور اس پر بھی قبضہ کر لیا ہے،ذرائع کے مطابق مبشر حیات،چوہدری قیصر اور شیخ طیب کو پاکستان کے معروف رئیل اسٹیٹ ڈیویلپر کی بھرپور پشت پناہی حاصل ہے اور کمشنر راولپنڈی،ڈی سی راولپنڈی اور ڈی جی راولپنڈی ڈیویلپمنٹ اتھارٹی,اسٹنٹ کمشنر گوجر خان اور تحصیلدار راولپنڈی کو زمینوں پر قبضے کی شکایات درج کروائی گئی ہیں جبکہ مقامی شہریوں پر تشدد اور زمینوں پر قبضے کے خلاف سی پی او راولپنڈی اور گوجر خان پولیس کو بھی درخواستیں دی گئی ہیں تاہم ملزمان تاحال غیر قانونی دھندہ جاری رکھے ہوئے ہیں اور بیرون ملک پاکستانیوں کو آر ڈی اے سے ایل او پی منظور ہونے کی یقین دہانی کروا کر فائلیں فروخت کی جارہی ہیں متاثرین نے روزنامہ ڈیجیٹل پوسٹ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا نشاندہی کا عمل مکمل ہونے کے بعد میگا سٹی گوجر خان کا سائٹ آفس بھی مسمار کرنا پڑے گا یہ دفتر مبینہ طور پر جدی مالکان کی زمین پر قبضہ کرکہ بنایا گیا ہے،زرعی قابل کاشت زمینوں پر ہاوسنگ سوسائٹی بنائی جا رہی ہے محکمہ زراعت اور ماحولیات سے این او سی لیئے بغیر کام کا آغاز کر دیا گیا ہے کمشنر راولپنڈی،ڈی جی آر ڈی اے اور ترجمان راولپنڈی ڈیویلپمنٹ اتھارٹی پہلے ہی منصوبے کو غیر قانونی قرار دے چکے ہیں ریونیو ڈیپارٹمنٹ نے موقف لینے پر بتایا شہری راجا شبیر،مقامی افراد کی درخواستوں پر نشاندہی کا عمل شروع کرنے کیلئے اقدامات کا آغاز کر دیا گیا ہے تاہم نقص امن خطرے کے پیش نظر حفاظتی انتظامات یقینی بنانے کے بعد ان موضع جات کے تمام مالکان کو نوٹسسز ارسال کر دیئے جائیں گے اور نشاندہی کے بعد تمام حقیقی مالکان کا تعین ہو جائے گا ذرائع کے مطابق راولپنڈی انتظامیہ کی میگا سٹی انتظامیہ کو تعمیراتی کام فوری طور بند کرنے کے احکامات کے بعد میگا سٹی گوجر خان سائٹ پر کام روک دیا گیا ہے اور زیادہ تر مشینری بھی غائب کر دی گئی ہے جبکہ ایک بلڈوزر اور ایکسیویٹر تاحال یہاں موجود ہے مقامی ذرائع کے مطابق میگا سٹی سائٹ پر مسلح افراد کا گشت جاری ہے اور سیاہ لباس ملبوس بھاری اتشیں اسلحے سے لیس افراد علاقے کا گشت کر رہے ہیں موہڑہ میال کے رہائشیوں نے نشاندہی کے دوران علاقے میں رینجرز تعیناتی کا مطالبہ کیا ہے انہوں نے کہا نشاندہی کے دوران اپنی ملکیتی زمینوں کا قبضہ لیں گے جس دوران نقص امن کا خطرہ ہے اتنی بڑی تعداد میں تعینات مسلح گینگ سے تحفظ فراہم کرنا پولیس کے بس میں نہیں ہے

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »